مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل 90ویں روز بھی

مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل 90ویں روز بھی معمولات زندگی بری طرح مفلوج

سرینگر 02 نومبر مقبوضہ وادی کشمیر اور جموں کے مسلم اکثریتی علاقوں میں بھارت کی طرف سے جاری غیر معمولی فوجی محاصرے اور مواصلاتی ذرائع کی معطلی کے باعث آج مسلسل 90ویں روز بھی معمولات زندگی بری طرح سے مفلوج ہیں ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق اس جدید دور میں بھی وادی کشمیر میں انٹر نیٹ اور پری پیڈ موبائل فون سروس معطل ہونے کے باعث 80 لاکھ کشمیر یوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔

کشمیری عوام غیر قانونی بھارتی قبضے اور مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنیکے یک طرفہ بھارتی اقدام کے خلاف دکانیں اور کاروباری مراکز مسلسل بند رکھ کر سول نافرمانی جاری رکھے ہوئے ہیں مقبوضہ وادی میں پبلک ٹرانسپورٹ اور ٹرین مقبوضہ کشمیر : سوپور میں بھارتی فوج کا حریت پسند نوجوان کو ہتھیاروں سمیت گرفتار کرنے کا دعویٰ ، قابض فوج کے مطابق گرفتار نوجوان کی شناخت بطور دانش ساکن اولڈ ٹاؤن بارہمولہ ہوئی ہے اور اسکا تعلق عسکری تنظیم لشکر طیبہ کے ساتھ ہے۔

مقبوضہ وادی میں غیر ریاستی افراد کی بھارتی ایجنسیوں کے ہاتھوں متواتر ہلاکتوں کے بعد آج 131 غیر کشمیری مزدور کشمیر چھوڑ کر بھارت واپس جا رہے ہیں

مقبوضہ کشمیر : جموں خطے میں مسلمانوں کو خوفزدہ اور ہراساں کرنے کے لئے بھارتی فورسز کے راجوری اور پونچھ اضلاع میں جدید ہتھیاروں کے ساتھ فلیگ مارچ مقبوضہ کشمیر : ضلع کولگام کے علاقے مانیگام میں نامعلوم مسلح افراد کا کانگریس کے مقامی لیڈر ریاض بٹ کے گھر پر دھاوا ، گھریلو اشیاء کی توڑپھوڑ ، یہ واقعہ گزشتہ شب پیش آیا

مقبوضہ کشمیر : سری نگر کے علاقے رعناواری میں درندہ صفت بھارتی فورسز کی بدترین ریاستی دہشتگردی ، ایک لاکھ نفوس پر مشتمل آبادی کو خاردار تاروں میں جکڑ کر ظلم و سربریت کی وحشیانہ کارروائی ، لوگوں پر بہیمانہ جبر و تشدد ، دو درجن کے قریب مکانات ، متعدد دکانوں اور گاڑیوں کی توڑپھوڑ

Leave a Reply