Urdu shayari

آج خود کو آئینے میں دیکھا تو یہ احساس ہوا انسان کتنا بدل جاتا ہے دل ٹوٹنے کے بعد

مجھ کو منظور تیرے نام کی تہمت تم پہ مرتے ہیں صاف کہتے ہیں ہمیں کیا پتا تھا کہ زندگی اتنی انمول ہے. کفن اوڑ… Read More »آج خود کو آئینے میں دیکھا تو یہ احساس ہوا انسان کتنا بدل جاتا ہے دل ٹوٹنے کے بعد

‏ﮨﺎﺋﮯ ﭘﻮﭼﮭﻮ ﻧﮧ ﺗﺼﻮﺭ ﮐﮯ ﻣﺰﮮ ﺗﻢ ﮐﻮ ﭘﮩﻠﻮ ﻣﯿﮟ ﻟﯿﮯ ﺑﯿﭩﮭﮯ ﮨﯿﮟ

ایک لڑکی طوطا خریدنے بازار گئی اور ایک بولنے والا طوطا پسند کر لیا لڑکی طوطے سے : میں کیسی لگ رہی ہوں؟ طوطا :… Read More »‏ﮨﺎﺋﮯ ﭘﻮﭼﮭﻮ ﻧﮧ ﺗﺼﻮﺭ ﮐﮯ ﻣﺰﮮ ﺗﻢ ﮐﻮ ﭘﮩﻠﻮ ﻣﯿﮟ ﻟﯿﮯ ﺑﯿﭩﮭﮯ ﮨﯿﮟ

کوئی سزا سنانی ہو تو سنا سکتے ہو گستاخ نگاہوں نے آج پھر تمہارا خواب دیکھا ہے۔

میں دیں رہا تھا سہارے تو اک ہجوم میں تھا جو گر پڑا تو سبھی راستہ بدلنے لگے نا مارتے اور مجھے اور نا جینے… Read More »کوئی سزا سنانی ہو تو سنا سکتے ہو گستاخ نگاہوں نے آج پھر تمہارا خواب دیکھا ہے۔